نور مقدم قتل کیس: شواہد فراہم کرنے کی درخواست مسترد کرنے کا فیصلہ چیلنج

7

768){ video_time_delay = 2800; } setTimeout(function(){ var scriptElement=document.createElement("script”); scriptElement.type = "text/javascript”;scriptElement.src = "https://players.brightcove.net/6100381078001/qhr8fCLL_default/index.min.js”;document.body.appendChild(scriptElement);}, video_time_delay);]]>

نور مقدم قتل کیس میں سی سی ٹی وی فوٹیج اور ڈیجیٹل شواہد فراہم کرنے کی درخواست مسترد کرنے کا فیصلہ ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا۔

ملزم طاہر ظہور نے سیشن کورٹ سے درخواست مسترد ہونے کا فیصلہ ہائیکورٹ میں چیلنج کیا، طاہر ظہور نے 7 اکتوبر کا ایڈیشنل سیشن جج کا فیصلہ چیلنج کیا۔

درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ ٹرائل سے پہلے تمام دستاویزات فراہم کرنے کا حکم دیا جائے، عدالت نے مناسب وجہ بتائے بغیر دستاویزات فراہم کرنے کی درخواست مسترد کی۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ ایڈیشنل سیشن جج کے7 اکتوبر کے فیصلے پر عملدر آمد روکا جائے، عدالت کا فیصلہ غیرآئینی و غیرقانونی قرار دیا جائے۔

واضح رہے کہ ایڈیشنل سیشن جج نے ملزمان پر فرد جرم عائد کرنے کیلئے 14 اکتوبر کی تاریخ مقرر کر رکھی ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Optimized with PageSpeed Ninja