ایلون مسک کے IX نے سیاسی اشتہارات پر سے پابندی ہٹا دی، غلط معلومات سے نمٹنے پر توجہ مرکوز کی۔

ایلون مسک کے IX نے سیاسی اشتہارات پر سے پابندی ہٹا دی، غلط معلومات سے نمٹنے پر توجہ مرکوز کی۔ خبریں/فائل

Elon Musk’s IX، سوشل نیٹ ورک جو پہلے ٹوئٹر کے نام سے جانا جاتا تھا، نے سیاسی اشتہارات پر پابندی کو اس طرح ہٹانے کا فیصلہ کیا ہے جس کا اثر 2024 کے آنے والے امریکی انتخابی سیزن پر پڑ سکتا ہے۔

پلیٹ فارم نے حال ہی میں اعلان کیا ہے کہ وہ سیاسی اشتہارات کی اجازت دے گا، لیکن یہ غلط معلومات کو ختم کرنا جاری رکھے گا۔

سوشل میڈیا پلیٹ فارم نے انتخابات کے قریب آتے ہی سیاسی مباحثوں کی میزبانی کے اپنے منصوبے کا انکشاف کیا ہے۔ کمپنی کا مقصد آزادی اظہار اور گمراہ کن مواد کے پھیلاؤ کو روکنے کے درمیان توازن برقرار رکھنا ہے۔

اس تبدیلی سے سیاسی امیدواروں کو آن لائن ووٹرز سے رابطہ قائم کرنے کے مزید مواقع ملنے کی توقع ہے، جبکہ اشتہار کی فروخت میں کمی کے ساتھ X کی آمدنی میں اضافہ ہوگا۔

UX نے پہلے “کاز پر مبنی اشتہارات” پر پابندیوں میں نرمی کی ہے اور ایسا لگتا ہے کہ نیا اقدام انتخابی مہمات اور سیاسی جماعتوں کو مخصوص امیدواروں کی حمایت یا مخالفت کرنے والے اشتہارات چلانے کی اجازت دیتا ہے۔ یہ فیصلہ 2019 میں سیاسی اشتہارات پر ٹوئٹر کی پابندی میں تبدیلی کی نشاندہی کرتا ہے، جسے 2020 کے امریکی صدارتی انتخابات کے دوران برقرار رکھا گیا تھا۔

اگرچہ X کی قیادت، بشمول ارب پتی ایلون مسک، آزادانہ تقریر پر زور دیتی ہے، لیکن پلیٹ فارم کی مواد کو مؤثر طریقے سے اعتدال کرنے کی صلاحیت کے بارے میں سوالات باقی ہیں۔ کمپنی نے کہا کہ وہ جانچ کے سخت طریقہ کار استعمال کرے گی تاکہ یہ یقینی بنایا جا سکے کہ صرف مناسب گروپ اور مہمات ہی تشہیر کر سکیں۔ یہ ابھرتے ہوئے خطرات کی نگرانی کے لیے اپنی سیکیورٹی اور انتخابی ٹیموں کو بھی بڑھا رہا ہے، جس میں AI سے تیار کردہ تصاویر شامل ہو سکتی ہیں۔

Leave a Comment