ڈالر 2 ماہ کی بلند ترین سطح پر

131

ڈالر 2 ماہ کی بلند ترین سطح پر

پاکستانی روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر دو ماہ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا۔

منی ایکسچینج سے جاری اعداد و شمار کے مطابق ڈالر گزشتہ روز کے مقابلے میں 1.05 روپے اضافے سے 156.20 روپے کا ہوگیا۔

اس سے قبل ڈالر رواں سال مارچ میں 156.27 کی سطح پر ریکارڈ کیا گیا تھا، ڈالر کی قیمت اگست 2018ء میں 168.87 روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچی تھی۔

ایگزیکٹو ڈائریکٹر پراچہ ایکسچینج ظفر پراچہ نے سماء ڈیجیٹل سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ رواں سال آنے والے بجٹ کے حوالے سے لوگوں کے خدشات بڑھ رہے ہیں جس میں امپورٹ ڈیوٹی (درآمد کی فیس) کا بڑھ جانا بھی شامل ہیں جس کی وجہ سے لوگوں نے درآمدات کی مد میں بیرون ملک رقم کی ادائیگی میں اضافہ کردیا ہے، اسکے علاوہ عموما مالی سال کے آخر تک درآمد کنندہ درآمدات کی مد رقم کی ادائیگی کررہے ہوتے ہیں۔ جس سے ڈالر کی کی طلب میں اضافہ ہوجاتا ہے اور اسکی قدر بڑھ جاتی ہے۔

ظفر پراچہ کے مطابق ڈالر کی قدر میں اضافہ عارضی ہے اور اگلے ایک ماہ میں ڈالر کی قیمت واپس 155 روپے کی سطح پر آجائے گی۔

تجزیہ کار سعد ہاشمی کے مطابق گزشتہ ماہ عید کی تعطیلات کے باعث برآمدات کم ہوئی، اور دوسری جانب درآمدات کی مد میں رقم کی ادائیگی کرنے کیلیے درآمد کنندہ کو ڈالر خریدنے پڑے جس سے ڈالر کی طلب میں اضافہ ہوا اور قیمت بڑھ گئی۔

تجزیہ کار کے مطابق اگر برآمدات میں اضافہ ہوتا ہے تو اس سے روپیہ کی قدر میں اضافہ ہونے کا امکان ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

Optimized with PageSpeed Ninja