حکومت کا نواز شریف کے پاسپورٹ کی معیاد ختم ہونے پر اہم فیصلہ

نواز شریف عدالتی اشتہاری ہیں پاسپورٹ کی تجدید نہیں کی جائے گی۔ وزارت داخلہ

48

سابق وزیراعظم نواز شریف کے پاسپورٹ کی معیاد آج رات 12 بجے ختم ہو جائے گی،سابق وزیراعظم نواز شریف کے پاس اس وقت ڈپلومیٹک پاسپورٹ موجود ہے۔وزارت داخلہ نے نواز شریف کا پاسپورٹ تجدید نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔وزرت داخلہ کے مطابق نواز شریف عدالتی اشتہاری ہیں پاسپورٹ کی تجدید نہیں کی جائے گی۔

 

 

نواز شریف اگر سفر کرنا چاہیں گے تو ایمرجنسی ٹریول ڈاکیومنٹ کے ذریعے کرنا ہو گا۔ ایمرجنسی ٹریول ڈاکیومنٹ کے حصول کے لیے انہیں وزارت خارجہ سے رجوع کرنا ہو گا۔وزیر داخلہ شیخ رشید نے گذشتہ روز اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ نواز شریف کے پاسپورٹ کی معاد 15 فروری کو پوری ہو رہی ہے تاہم 16فروری کو ان کا پاسپورٹ منسوخ کر دیا جائے گا۔

 

 

اسی حوالے سے تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف سے متعلق بتایا کہ نواز شریف کے حوالے سے دو بڑی خبریں ہیں ایک تو یہ کہ انہوں نے برطانیہ میں لیگل فرم کو ہائر کیا ہے کہ وہ نواز شریف کو ویزے میں توسیع کروا کر دیں۔

 

 

 

نواز شریف کا پاسپورٹ فروری 2021ء کو ایکسپائر ہو جائے گا جس کے بعد اس پاسپورٹ کی قانونی حیثیت ختم ہو جائے گی ۔ اب نواز شریف کے ویزا میں توسیع ہو گی یا نہیں یہ وہ سوال تھا جس کے لیے انہوں نے برطانیہ میں قانونی ماہرین کو بلایا تھا۔ صحافی عمران ریاض خان نے کہا کہ جہاں تک مجھے ٹریول ایجنٹس سے بات کرنے پر پتہ چلا وہ یہ کہ اگر پاسپورٹ ایکسپائر ہو جائے تو ویزا بھی قابل عمل نہیں رہتا۔

 

 

 

ویزے کے قابل عمل ہونے کے لیے آپ کو صاف کہا جاتا ہے کہ پاسپورٹ کی تجدید کروائیں، قانونی ماہرین نے نواز شریف کو یہی کہا ہے کہ آپ ویزے میں توسیع کے لیے اپلائی کر دیں ، اگر اپلائی کیا ہو تب بھی ہم برطانیہ میں کوئی چکر چلا کر آپ کے ویزے میں توسیع کروا لیں گے ، اور عین ممکن ہے کہ نواز شریف کے ویزے میں توسیع ہو جائے گی۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.